loader

گرمی کی حدت کم ہوتے ہی خونی کھیل لوٹ آیا ۔

  • Created by: editor
  • Published on: 03 Sep, 2019
  • Category: News / News
  • Posted By: Editor

Post Info

(نمائندہ خصوصی انٹر نیشنل نیوز ) موسم گرما کے اواخر میں ہوا میں چلتی نہ دکھنے والی چھُریاں معصوموں کے گلوں پر پھرنے لگتی ہیں ۔حکومتی اقدامات نہ ہونے کے برابر ہوتے ہیں ۔ پولیس ہمیشہ پتنگ مافیا کے ساتھ ملی بھگت ان کی فروخت میں ہاتھ بٹاتی نظر آتی ہے ۔ پشاور میں کیمکل ڈور کے خلاف دفعہ 144 نافظ کرنے کے باوجود کمی نہ ہو سکی ۔
تفصیلات کے مطابق سڑک پر پتنگ کے پیچھے بھاگتے تین بچے نمائندہ انٹر نیشنل نیوزکی گاڑی کے سامنے آ گئے ۔ بر وقت بریک لگانے کے سبب بمشکل المناک حادثے سے بچ پائے ۔ بچوں نے حادثے سے بچنے کے بعد رکنے کی بجائے فوری طور پر پتنگ کی ڈور پکڑ کر کھینچی تو ڈور پاس ایک موٹر سائکل سوار کی گردن پر پھر گئی ۔ بھیڑ اکٹھی ہونے پر بچوں کی کم عمری کا کہ نمائندہ کو پولیس اور میڈیا رپوٹ بنانے سے روک دیا گیا ۔ علاوہ ازیں پنجاب کے شہر فیصل آباد کے کئی پولیس کانسٹیبل بھی مبینہ طور پر کیمکل ڈور اور پتنگوں کی خرید و فروخت میں ملوث ہیں ۔ والدین اور حکومت کو اس خطرناک اور خونی کھیل پر ہر حال میں پابندی لگانا ہوگی ۔جو ہر سال ان گنت جانیں لینے کا باعث بنتی ہیں ۔ اس کے ساتھ ساتھ پولیس کو بھی پابند کرنا ہوگا کہ بلا تفریق اپنے اور عوام کے درمیان موجود ایسے بدعنوان عناصر کو گرفتار کر کے پابند سلاسل کرے جو ہر سال خونی ڈور بناتے اور بیچتےہیں ۔ورنہ ہر سال معصوم افراد ان دیکھی چھُریوں کی بھینٹ چڑھتے رہیں گے ۔ 

Related Posts