loader

حکومت نے جن معاملات میں تاخیر کی اس کاخمیازہ اسے بھگتنا

  • Created by: admin
  • Published on: 14 May, 2019
  • Category: News / Social
  • Posted By: Admin

Post Info

 لاہور آئی ایم ایف کے ساتھ معاملات طے پا چکے مگر حتمی فیصلہ ہونا باقی،کچھ ہی لمحے ہوں گے کہ بھاری بھرکم قرضہ پاکستانی حکومت کے حوالے کر دیا جائے گا۔اگرچہ اتنے زیادہ پیسے ملنا خوشی کی بات ہے کہ اس سے ہماری معاشی صورت حال کو سہارا مل جائے گا مگر اس وقت یہ خوشی کافور ہو جاتی ہے جب اس قرض نماامداد کے ساتھ مہنگائی،بیروزگاری،نجکاری اور دیگر مسائل کو خود پر مسلط ہوتا دیکھتے ہیں۔

ہمیں جب آئی ایم ایف کے پاس جانا چاہیے تھا تب ہم نے ادھر ادھر بھاگنے میں وقت گزار دیااور آج جب تاخیر سے پہنچے ہیں تو معاملات ہاتھ سے نکل چکے ہیں کہ اب سخت اور بے رحم فیصلے کیے بغیر کوئی چارہ ہی نہیں ہے۔اسی حوالے سے نجی ٹی وی چینل پر گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی اور تجزیہ نگار ہارون الرشید کا کہنا تھا کہ عمران خان اور اس کے ساتھیوں نے آئی ایم ایف کے پاس جانے میں تاخیر کر دی۔

انہیں اس قرضے کے حصول کے لیے جلدی کرنا چاہیے تھی۔اب تو مہنگائی کاایسا ریلا آئے گا کہ غریب عوام دہائیاں دیتے نظر آئیں گے۔آپ ایک کروڑ نوکریاں اور پچاس لاکھ گھروں کی تعمیر بھول جائیں اگر آئندہ دو سالوں میں بمشکل ہماری معیشت ہی اپنے پیروں پر کھڑی ہو جائے تو یہ بڑی بات ہے کیونکہ اس وقت معیشت کی جو صورت حال ہے اس کے مطابق نہ تو کوئی ریلیف نظر آ رہا ہے اور نہ ہی حکومت کے وعدے پورے ہوتے نظر آ رہے ہیں بلکہ مہنگائی کے سونامی کے ساتھ بیروزگاری میں بھی خاطر خواہ اضافہ ہوتا نظر آ رہا ہے۔

اب ایسے میں سخت اقدامات کرنا ہوں گے جس میں عوام کو بھی حکومت کا ساتھ دینا ہو گااور یہ مشکل وقت خوش دلی سے قبول کرنا ہو گااگر ایسا نہ کیا تو معیشت کو سنبھالا ملنا نہایت مشکل ہو جائے گااور ہم اور زیادہ پستی میں گرتے چلے جائیں گے۔

Related Posts